- Advertisement -

Mayyat ko dafan karte waqt qabar me Ahadnama Ya surah mulk

Ya Quran Sharif Ki ayate rakhna kaisa hai. Kya isse murde ko faida hoga ?
Jawab:
Qabar me ahad naama o shjara wagairh rakh sakte hain aur maiyyit ke munh ke samne qibla ki janib ki deewar me taaq bana kar us taaq me rakhein aur is amal se maiyyit ke bakhshish ki ummeed hai.
واللہ تعالیٰ اعلم
Jawab : شجرہ یا عہد نامہ قبر میں رکھنا جائز ہے اور بہتر یہ ہے کہ میّت کے مونھ کے سامنے قبلہ کی جانب طاق کھود کر اس میں رکھیں ، بلکہ درمختار میں کفن پر عہد نامہ لکھنے کو جائز کہا ہے اور فرمایا کہ اس سے مغفرت کی امید ہے اور میّت کے سینہ اور پیشانی پر بسم اﷲ الرحمن الرحیم لکھنا جائز ہے۔ ایک شخص نے اس کی وصیّت کی تھی، انتقال کے بعد سینہ اور پیشانی پر بسم اﷲ شریف لکھ دی گئی پھر کسی نے انھیں خواب میں دیکھا، حال پوچھا؟ کہا: جب میں قبر میں رکھا گیا،عذاب کے فرشتے آئے، فرشتوں نے جب پیشانی پر بسم اﷲ شریف دیکھی کہا تو عذاب سے بچ گیا۔ (3) (درمختار، غنیہ، عن التاتار خانیہ) یوں بھی ہو سکتا ہے کہ پیشانی پر بسم اﷲ شریف لکھیں اور سینہ پر کلمہ طیبہ لَا اِلٰہَ اِلَّا اللہ مُحَمَّدٌ رَّسُوْلُ اللہ صلی اللہ تعالیٰ علیہ وسلم مگر نہلانے کے بعد کفن پہنانے سے پیشتر کلمہ کی انگلی سے لکھیں روشنائی سے نہ لکھیں ۔ (4) (ردالمحتار)
(Bahar e shari’at hissa 4)
○●●●●●●●●●●●●○
Khalifa e Huzoor Tajushshariah
Mufti Maqsood Akhtar Qadri Razvi Amjadi
Khadim Dar al-Ifta Ridawi Amjadi
○●●●●●●●●●●●●○

- Advertisement -

Comments are closed, but trackbacks and pingbacks are open.

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More

Privacy & Cookies Policy